سائینس دان کے مطابق، اگر مذھبی خدا عظیم تر اور طاقتور ترین ہے اور ساتھ میں نہایت رحم کرنے والا بھی ہے تو بےشمار زلزلوں، طوفانوں، سیلابوں بیماریوں کی وجہ سے اربوں لوگوں کی تکلیف دہ اموات اور بعد کے لوگوں کے غموں کا مداوہ کر سکتا۔

اسکا مطلب یہ ہے کہ مذھبی خدائی تصور خود ہی اپنے دلائل کو توڑنے والا ہے۔

اگر خدا اپنی ہی مخلوق کو معزور بنائے معزور پیدا کرے تو اسکی صناعی بھی سوال طلب ہے۔

پس مذھبی خدا عقلی اور سائینسی ، اور فلسفیانہ سطح پر بالکل پورا نہیں اترتا جیسا کہ مذھبی خدا کا تصور ہے جیسے کہ اسکی صفات کا تذکرہ ہے

برین واشڈ لوگ جھوٹ گھڑ گھڑ کے اگلی نسلوں کو گمراہ کرتے ہیں۔

انبیا رسول اور اولیا تمام مذھب کنٹرول کے طریقے ہیں۔

اسلام چونکہ نیا مذھب تھا اس لئے یہ تلوار سے ہی پھیلایا گیا مگر نام سلامتی رکھا۔۔لوٹ مار کی گئی مگر نام رحت رکھا۔۔ بچوں عورتوں کو بیچا خریدا گیا مگر نام رحمت رکھا۔۔یہ فریب لفظی مباشرت کے طریق پر مولوی ، پنڈت گورو ربی لوگوں کو دیتے ہین مگر صاحب عقل جانتا ہے کہ تمام جھوٹ ہے

رفیع رضا۔۔